’ہندوستان میں منافرت و عداوت بڑھتی جارہی ہے‘

حیدرآباد: ڈاکٹر سید آصف عمری امیر صوبائی جمعیت اہلحدیث تلنگانہ نے ایک جلسہ عام سے خطاب کے دوران ہندوستان میں بڑھتی ہوئی منافرت اور عداوت پر تشویش کا اظہار کیا۔

خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ بے شمار تہذیبوں، ہمہ جہت کلچر اور ہندوستان کے بے شمار ادیان و مذاہب برسہا برس سے امن و شانتی سے تھے تاہم جیسے ہی مرکزی حکومت نے شہریت ترمیمی قانون نافذ کیا، ملک کے کونے کونے سے صدائے احتجاج بلند ہونے لگی ہے۔ انہوں نے کہا، شاہین باغ سے جہد مسلسل ملک کے چپہ چپہ میں جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی۔ اس طرح کے احتجاجی نعرے دستور بچاؤ ملک بچاؤ دراصل سارے ہندوستانیوں کی جمہوریت پسند ہونے کا ثبوت ہے۔

آصف عمری نے مزید کہا کہ یہ ہر سیکولر شہری کی فطری پکار ہے اس کو حکومت مخالف یا ملک سے غداری کہنا غلط ہے کیونکہ ملک کا تحفظ، سلامتی،بھائی چارہ، انصاف ہمارے ملک کے آئین میں ہے۔ جب آئین کو تبدیل کردیا جائے تو صرف ڈکٹیٹرشپ باقی رہتی ہے اور یہی مطلق العنانی سارے سماج اور ملک کیلئے ناسور ہے۔

مولانا نے کہا کہ موجودہ ہندوستان میں دن بہ دن نفرت اور عداوت کا ماحول بڑھتا جارہا ہے۔آئین کے دشمن پرامن ماحول کو دہشت زدہ کررہے ہیں لوگ خوف و ہراس کی زندگی گذارنے پر مجبور ہیں۔ ان حالات میں قرآن مجید سے ہمارے لئے یہ رہنمائی ملتی ہے کہ ہم نفرت کا جواب نفرت سے نہیں الفت و محبت سے دیں گے کیونکہ اسلام، احترام انسانیت سکھاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ لگ بھگ دوماہ سے ملک میں مسلسل سکون اور چین برباد ہوچکا ہے۔ملک کی معیشت تباہ ہوچکی ہے۔ سرمایہ دار طبقہ بھی یہاں اپنا سرمایہ لگانے سے پیچھے ہٹ گیا ہے۔ ملک میں این آر سی اور دستور میں ترمیم کے خلاف احتجاج ہورہا ہے۔شائد آزادی کے بعد پہلی مرتبہ جاریہ سال عظیم الشان پیمانہ پر یوم جمہوریہ منایا گیا۔ مرکزی حکومت نے ظالمانہ و آمرانہ پالیسیاں نافذ کرکے امن پسند جمہوری ملک کی شکل و صورت بگاڑ دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ تعلیمی ادارے، اقتصادیات، حمل و نقل کے ذرائع اور غریب عوام شدید بحران کا شکار ہیں۔ملک کے چند تخریب پسند عناصر سارے ماحول کو گمراہ کررہے ہیں۔ہر جگہ بس تشدد، جھگڑے،خلفشار، اندرونی وبیرونی سازشیں،امن پسند، انصاف پسند افراد کے خلاف گہری سازشیں اور مختلف جھوٹے مقدمات میں انہیں پھنساکر وطن کے باغی قرار دیا جارہا ہے۔مسلمانوں کو مایوس ہونے اور گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ہم تمام اللہ کی طرف رجوع ہوجائیں اور گھروں میں دین شریعت نافذ کریں۔



from Qaumi Awaz https://ift.tt/2UE3vAa

Post a Comment

0 Comments