دہلی انتخاب میں کامیابی کا جشن بنا ماتم، عآپ رکن اسمبلی کے قافلہ پر فائرنگ، ایک ہلاک

دہلی الیکشن میں عام آدمی پارٹی کو زبردست کامیابی حاصل ہوئی ہے اور پارٹی کارکنان پوری دہلی میں اس کا جشن منا رہے تھے۔ اس درمیان مہرولی سے نومنتخب عآپ رکن اسمبلی نریش یادو کے قافلے پر منگل کی دیر رات کچھ نامعلوم افراد نے فائرنگ کر دی جس میں ایک عآپ کارکن ہلاک ہو گیا۔ اس فائرنگ واقعہ میں ایک شخص کے زخمی ہونے کی خبر بھی موصول ہوئی ہے جس کا علاج اسپتال میں چل رہا ہے۔

فائرنگ واقعہ اور ایک عآپ کارکن کی موت کی خبر سے ایک ہنگامہ سا برپا ہو گیا اور اس تعلق سے منگل کو ہی دیر رات ایک ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔ ساؤتھ ویسٹ ایڈیشنل ڈی سی پی انجیت پرتاپ سنگھ نے اس سلسلے میں کہا کہ حملہ آور ایک ہی تھا جس نے قافلے پر فائرنگ کی۔ انجیت پرتاپ سنگھ نے ساتھ ہی یہ بھی بتایا کہ حملہ آور کے نشانے پر نریش یادو نہیں تھے بلکہ وہی شخص تھا جسے اس نے گولی ماری۔

ایک پولس افسر نے واقعہ کے تعلق سے تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ نومنتخب رکن اسمبلی نریش یادو اور ان کے حامی مہرولی اسمبلی حلقہ میں ایک مندر میں پوجا کرنے گئے تھے اور پوجا کر کے لوٹ رہے تھے جب ایک حملہ آور نے فائرنگ کر دی۔ فائرنگ واقعہ کے بعد نریش یادو نے اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہی واقعہ افسوسناک ہے۔ مجھے حملے کے پیچھے کی وجہ معلوم نہیں، لیکن یہ سب کچھ اچانک ہوا۔ میں جس گاڑی میں تھا، اس پر حملہ کیا گیا۔ مجھے یقین ہے کہ اگر پولس نے صحیح طریقے سے جانچ کی تو حملہ آور پکڑے جائیں گے۔‘‘

عام آدمی پارٹی کے سرکردہ لیڈروں میں شامل سنجے سنگھ نے بھی اس واقعہ پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ انھوں نے اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے ٹوئٹ کیا ہے کہ ’’مہرولی رکن اسمبلی نریش یادو کے قافلے پر حملہ، اشوک مان کا سرعام قتل، یہ ہے دہلی میں قانون کا راج۔ مندر سے دَرشن کر کے لوٹ رہے تھے نریش یادو۔‘‘



from Qaumi Awaz https://ift.tt/31OrOwF

Post a Comment

0 Comments